غزل

0
206
GHAZAL

پاس میرے دولتِ دنیا نہیں
پر کسی کے سامنے جھکتا نہیں

کتنے گل برباد ظالم نے کئے
پھر بھی اپنا گلستاں اجڑا نہیں

تم تو دعویٰ کر رہے تھے عشق کا
پھر تمہیں کیوں یاد میں آیا نہیں

آسماں کو چھونا جس کا خواب ہے
وہ ابھی تک نیند سے جاگا نہیں

میں تمہارے بعد بھی خوش ہوں مگر
جتنا خوش پہلے تھا اب اتنا نہیں

میں فقط اپنا سمجھتا تھا جسے
وہ سبھی کا تھا مگر میرا نہیں

ALSO READ
TALE OF A HEART

لاکھ نفرت کی ہوائیں تیز ہوں
یہ محبت کا دیا بجھتا نہیں

Editor's Note

The Kashmir Pulse is now on Google News. Get latest news updates by subscribing to our Telegram handle or join our WhatsApp Group!

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here